700

شیرپاو ایک بار پھر صوبائی حکومت سے باہر،وزیراطلاعات شاہ فرمان نے پریس کانفرنس میں پارٹی قیادت کا فیصلہ سنا دیا.

پاکستان تحریک انصاف نے ایک بار پھرقومی وطن پارٹی سے اپنی راہیں جدا کرلی ہیں. خیبر پختونخوا کے وزیر اطلاعات شاہ فرمان نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ پاناما کے ایشو پر قومی وطن پارٹی نے تحریک انصاف کا ساتھ نہیں دیااس لئے ان کی پارٹی نے قومی وطن پارٹی سے سیاسی علیحدگی کافیصلہ کرلیا ہے . انہوں نے کہا کہ ہم اکثریت میں رہیں یا نہیں ہم نےاس بارے میں نہیں سوچا،قومی وطن پارٹی سے راستے جداہیں یہ پارٹی قیادت کا فیصلہ جس پر عمل درآمد اب وزیراعلیٰ پرویز خٹک ایکشن لیں گے،انہوں نے کہا ہم صرف اقتدار کی خاطر اکٹھے نہیں رہ سکتے،زرائع کا کہنا ہے کہ تحریک انصاف اور قومی وطن پارٹی کے مابین ایک دوسرے کے محکموں میں مداخلت پر اختلافات چلے آرہے تھے . جب کہ محکمہ معدنیات میں ٹھیکوں کے حوالے سے بھی قومی وطن پارٹی کے تحفظات تھے جس سے آفتاب خان شیرپاو اور وزیراعلی پرویزخٹک دونوں کو آگاہ کیا تھا ، یاد رہے کہ نومبر 2013 میں بھی تحریک انصاف کی قیادت نے قومی وطن پارٹی کے وزراء پر کرپشن کے الزامات عائد کرکے انہیں حکومت سے الگ کیا تھا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں