596

رستم کو تحصیل کا درجہ دینے کی منظوری دیدی گئی. منظوری کابینہ کے اجلاس میں دی گئی.

صوبائی کابینہ نے لوکل گورنمنٹ چوتھے ترمیمی بل2017ء کی منظوری دیدی۔واضح رہے کہ حکومت نے نئے ضلعی کولائی پالاس کوہستان اور 14نئی تحصیلوں جن میں تحصیل رستم مردان، لوئر تناول اور لورا یبٹ آباد، بفہ پخال اور دربند مانسہرہ، خان پور ہری پور،لارجم اور شرینگل دیر اپر، کاکی بنوں، چکیسر شانگلہ، ملخو تور خو اور دروش چترال، بائیزئی ملاکنڈ اور گمبٹ ضلع کوہاٹ شامل ہیں۔ ان پر عمل درآمد کیلئے لوکل گورنمنٹ کے ایکٹ میں ترمیم ضروری تھی جس کی کابینہ نے منظوری دیدی۔
صوبائی کابینہ نے ایکٹ کے ذریعے خیبر پختونخوا ہائیڈل ڈویلپمنٹ فنڈ آرڈیننس2001ء میں مجوزہ ترامیم کی منظوری دیدی ہے۔ترامیم کا مقصد ہائیڈل پاور کے علاوہ دیگر توانائی کے قدرتی وسائل سے استفادہ کرنا ہے جن میں شمسی توانائی، کوئلہ، تھرمل اور windکے توانائی کے وسائل سے بجلی پیدا کرنا شامل ہیں۔علاوہ ازیں آئل و گیس کی پیداوار کو بھی مذکورہ فنڈ سے ترقی دینا بھی ترامیم کا حصہ ہیں۔ ان ترامیم کے ذریعے آئل و گیس کی رائلٹی گیس پر ایکسائز ڈیوٹی،ونڈ فال لیوی، الیکٹریسٹی ڈیوٹی، آئل پر ایکسائز ڈیوٹی سے حاصل شدہ رقم بھی ہائیڈل ڈویلپمنٹ فنڈ کا حصہ ہوگی۔ تمام فنڈز کو یکجا کرنے سے توانائی کے تمام پراجیکٹس کی تکمیل یقینی بنائی جا سکے گی۔آئندہ بجٹ میں بجلی کے خالص منافع کی حد سے بھی ہائیڈل ڈویولپمنٹ کیلئے فنڈز فراہم کئے جا سکیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں